بی پی ایل اے الیکشن2020 :پروگریسو پینل فتح کے لئے پرامید

بلوچستان پروفیسرز اینڈ لیکچررز ایسوسی ایشن ( بی پی ایل اے ) کے انتخابات کے سلسلے میں انتخابی مہم شروع ہوچکی ہے اور ہر گزرتے دن کے ساتھ انتخابی مہم زور پکڑرہی ہے ۔ امسال دو سال کی مدت کے لئے ہونے والے بی پی ایل اے الیکشن میں صرف دو پینل حصہ لے رہے ہیں پہلا پینل پروگریسو اور دوسرا پینل یکجہتی کے نام سے میدان میں ہے ۔


واضح رہے کہ بی پی ایل اے کے گزشتہ انتخابات میں تین پینلزنے حصہ لیا تھا جن میں پروگریسو ، ڈیموکریٹک اور ریفارمرزپینل شامل تھے ان انتخابات میں پروگریسو پینل نے کامیابی حاصل کی تھی غیر جانبدار حلقوں کے مطابق2018ءسے2020ءتک کا م کرنے والی کابینہ بی پی ایل اے کی تاریخ کی سب سے زیاہ دفعال اور متحرک کابینہ ثابت ہوئی جس نے پروفیسرز برادری کے لئے اہم اہدا ف حاصل کئے مذکورہ کابینہ کے دو سال پورے ہونے کے بعد اب وبائی حالات کے بعد کالجز کھلنے پر نئے انتخابی شیڈول کا اعلان ہوا تو ماضی کے برعکس دیگر دو پینلز نے ” یکجہتی “ کے نام سے ایک الگ پینل قائم کیا جس میں سابقہ

ریفارمرز اور ڈیموکریٹک کے امیدواران شامل ہیں ۔
بی پی ایل اے کے انتخابات26اکتوبر کو منعقد ہوں گے جس کے لئے اس وقت دوپینل میدا ن میں ہیں ۔ پہلا پینل پروگریسیو ہے اور دوسرا پینل یکجہتی ۔پروگریسیو پینل کے امیدواران اور اراکین اپنی فتح کے لئے پرامید ہیں۔پروگریسیو پینل کے امیدواران اس وقت مکران ڈویژن کے دورے پر ہیں جہا ں سے واپسی پر وہ کوئٹہ ،ژوب ، سبی اور نصیر آباد ڈویژن کے دورے کریں گے جبکہ قلات اور رخشان ڈویژن کے دورے پہلے ہی کئے

جاچکے ہیں ۔
بی پی ایل اے الیکشن2020ءکے سلسلے میں پروگریسو پینل نے بلوچستان بھر کے کالجز کاجو ” وزٹ شیڈول “ جاری کیا تھا اس کے مطابق ، قلات ، منگچر ، سوراب، خضدار، وڈھ ،زہری ، پنجگور ، ہوشاب کے کالجز کے وزٹ کے بعد یکم اکتوبر کو تربت ، تمپ ، 2اکتوبر کو گوادر ، پسنی ، اورماڑہ،3اکتوبر کو حب اور بیلہ ، 4اکتوبر کو کوئٹہ میں مختلف کالجز کے پروفیسرز سے غیر رسمی نشستیں رکھی جائیں گی 5اکتوبر کو ڈھاڈر ، سبی ، بھاگ ،6اکتوبر کو ڈیرہ مراد جمالی اور ڈیرہ اللہ یار ،7اکتوبر کو صحبت پور ، اوستہ محمد ،8اکتوبر کو مستونگ ، کانک ، خاران ،9اکتوبر کو نوشکی ، کردگاپ ،10اکتوبر کو خانوزئی ، مسلم باغ اور قلعہ سیف اللہ ،11اکتوبر بروز اتوار کوئٹہ میں مختلف کالجز کے پروفیسرز کے ساتھ غیر رسمی نشستیں رکھی جائیں گی جس کے بعد بارہ اکتوبر کو ژوب ،13اکتوبر کو لورالائی ، دکی ، ہرنائی ، 14اکتوب کو پشین ، 15اکتوبر کو چمن ،16اکتوبر کو مچھ ،17اکتوبر کو بروری گرلز کالج ، جناح ٹاﺅن گرلز کالجا ور پشتون آباد کالجز،19اکتوبر کو موسیٰ کالج اورنواں کالی کالج ، منگل20اکتوبر کو بروری بوائز ، سائنس کالج ، شیخان کالج ،21اکتوبر کو شیخان گرلز اور پوسٹ گریجوایٹ کالج،22اکتوبر کو سیٹلائٹ ٹاﺅن گرلز ، کواری گرلزکالج،23اکتوبر کو کیچی بیگ گرلز کالج اور24اکتوبر کو کینٹ گرلز کالج کے دورے کئے جائیں گے جاری ہونے والے اعلامیے میں تمام ڈویژنل کابینہ عہدیداران کو تاکید کی گئی کہ وہ اپنے اپنے ڈویژنز میں الگ سے بھی کالجز کا وزٹ یقینی بنائیں ۔

بلوچستان پروفیسرز اینڈ لیکچررز ایسوسی ایشن کے انتخابات میں پروگریسیو پینل کے امیدواروں نے پروفیسرز برادری کو درپیش مسائل کے حل کے لئے ہر حد تک جانے کا عزم ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ دو سال کے دوران بی پی ایل اے نے جس فعالیت کا مظاہرہ کیا اس کی ماضی میں کوئی مثال نہیں ملتی ، ہم پروفیسرز کے وقار اور سربلندی کی خاطر میدا ن میں اترے ہیں اور انشاءاللہ کسی بھی موڑ پر پروفیسر برادری کو مایوس نہیں کریں گے بلکہ ہمیشہ ان کی امیدوں پر پورا اتریں گے ۔

پروگریسیو پینل کے صدارتی امیدار پروفیسر آغا زاہد ، نامزد امیدواربرائے جنرل سیکرٹری پروفیسر نصرت اللہ بلوچ، ودیگر امیدواران پروفیسر عین اللہ کبزئی ،پروفیسر سید ناصر شاہ ، پروفیسر عبدالقدوس کاکڑ،عذرا مری ، تسمیہ نعما ن ،پروفیسر صابر بنگلزئی ،نقیب اللہ درانی ،محمد تقی ، ریحان ندیم بلوچ،عبدالطیف دمڑ ،قمر عباس شاہ ،مشتاق احمد گچکی،سلیم جان مندوخیل،عزیز جمالدینی پروفیسر ناصر محمود و دیگر پروگریسیو امیدواران نے گزشتہ روز مختلف تقاریب سے خطاب کیامختلف کالجز کے سٹاف روم میں پروفیسرز سے ملاقات کی پروفیسرز کے سامنے اپنا موقف و منشور رکھا اور انہیں دوسالہ کارکردگی سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ ہماری دوسالہ کارکردگی ہمارا طرہ امتیاز ہے۔ تنظیم کو چند افراد کی مفادات سے نکال کر پروفیسرز کی اجتماعی مفادات کا امین بنایا۔ دوسالہ دور میں پروفیسرز کے ساتھ مضبوط رابطے میں رہے اور اسٹاف رومز کو اہمیت دیتے ہوئے بے مثال جدوجہد کی جو پروفیسرز کے سامنے روز روشن کی طرح عیاں ہے اور ہمیں امید ہے کہ پروفسیرز برادری انتخابات میں پروگریسو پینل کو کامیاب بنائے گی ۔
پروگریسو پینل کے امیدواروں نے کہا ہے کہ پروفیسرز برادری کے وقار اور سربلندی پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوسکتا کالج اساتذہ کے مسائل اس وقت تک حل نہیں ہوں گے جب تک ان مسائل کو اجاگر نہیں کیا جاتا ماضی میں کالج اساتذہ کے مسائل اجاگر ہی نہیں ہوئے جبکہ اس بات کا کریڈٹ بی پی ایل اے کی سابق کابینہ کو جاتا ہے جس نے گزشتہ دو سال کے دوران نہ صرف تنظیم میں نئی روح پھونکی بلکہ اہم اہداف بھی حاصل کئے ، کالج اساتذہ بی پی ایل اے انتخابات میں انتخابی نشان مشعل پر مہر لگا کر پروگریسو پینل کی کامیابی کو یقینی بنائیں تاکہ سابقہ روایت کو برقرار رکھتے ہوئے پروگریسو پینل کالج اساتذہ کے مسائل کے حل کے لئے فعال ومتحرک کردار ادا کرتا رہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں