بلوچستان حکومت پربھی خطرہ منڈلانے لگا؟

(اردو ویوز)وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں جے یوآئی اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کے جاری آزادی مارچ سے وفاقی حکومت ختم ہو یا نہ ہو بلوچستان حکومت کے لئے یہ آزادی مارچ کوئی اچھے نتائج کا حامل نہیں ہوسکے گا کیونکہ بلوچستان کی مخلوط صوبائی حکومت میں شامل تیسری بڑی جماعت عوامی نیشنل پارٹی بھی وفاقی حکومت کے خلاف جاری آزادی مارچ کا حصہ ہے آزادی مارچ میں اے این پی کی بھرپور شرکت اور حکومت مخالف سرگرمیوں کا نوٹس لیتے ہوئے بلوچستان میں حکمران جماعتوں (بلوچستان عوامی پارٹی اور تحریک انصاف)کے ایم پی ایز نے وزیراعلیٰ جام کمال اور وزیراعظم عمران خان کو اپنے شدید تحفظات سے آگاہ کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ اے این پی کوحکومت سے نکال دیا جائے۔ایسی صورت میں اے این پی بلوچستان اسمبلی میں اپوزیشن بینچوں پر چلی جائے گی اور اگر ایسا ہوا تو بلوچستان اسمبلی میں وزیراعلیٰ جام کمال کے اکثریت کھودینے کے امکانات پیدا ہوں گے اور یہ صورتحال ان ہاؤس تبدیلی پر بھی منتج ہوسکتی ہے جوتحریک انصاف اور بلوچستان عوامی پارٹی کے لئے بہت بڑا اپ سیٹ ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں